کھٹر کابینہ میں 10 وزیر شامل، وپی چوٹالہ کے بھائی نے بھی لی حلف

Share Article

ہریانہ میں بھارتیہ جنتا پارٹی اور جننايك جنتا پارٹی حکومت کا پہلا کابینہ توسیع جمعرات کو ہوا. 10 وزراء نے حلف اٹھا لیا. بی جے پی کے کوٹے سے 8 اور جےجےپي کے کوٹے سے ایک اور ایک آزاد ممبر اسمبلی کو وزیر بنایا گیا۔

ہریانہ میں بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جے پی) اور جننايك جنتا پارٹی (جےجےپي) حکومت کا پہلا کابینہ توسیع جمعرات کو ہوا. 10 وزراء نے حلف اٹھا لیا. بی جے پی کے کوٹے سے 8 جےجےپي کے کوٹے سے ایک اور ایک آزاد ممبر اسمبلی کو وزیر بنایا گیا. ان وزراء کی حلف کے ساتھ کھٹر حکومت میں وزراء کی تعداد 12 (سی ایم کو لے کر) ہو گئی ہے۔

جمعرات کو ہوئے کابینہ توسیع میں 6 اراکین اسمبلی نے کابینہ وزیر کے عہدے کا حلف دلائی گئی، جبکہ 4 ممبران اسمبلی کو وزیر مملکت کے عہدے کا حلف دلائی گئی. انل وج، كورپال گوجر، مول چند شرما، جے پی دلال، بنواری لال اور رنجیت سنگھ چوٹالہ نے کابینہ وزیر کے عہدے کا حلف لیا، جبکہ اوم پرکاش یادو، کملیش ڈھاڈھا، انوپ دھانك اور سندیپ سنگھ نے وزیر مملکت کے عہدے کا حلف لیا۔

یہ بنے کابینہ وزیر

– سب سے پہلے بی جے پی کے سینئر لیڈر اور انبالہ چھاؤنی سے رکن اسمبلی انل وج نے حلف اٹھا لیا۔

– اس کے بعد بی جے پی کے ہی بڑے لیڈر اور جگادھاري سے رکن اسمبلی كورپال گوجر نے کابینہ وزیر کے عہدے کا حلف لیا۔

– كورپال گرج کے بعد بی جے پی لیڈر اور بلّبھ گڑھ سے رکن اسمبلی مول چند شرما نے کابینہ وزیر کے عہدے کا حلف لیا۔

– اوم پرکاش چوٹالہ کے چھوٹے بھائی اور رانيا سے آزاد ممبر اسمبلی رنجیت سنگھ نے کابینہ وزیر کے عہدے کا حلف لیا۔

– رنجیت سنگھ کے بعد بی جے پی لیڈر اور لوهارو سیٹ سے ممبر اسمبلی جے پی دلال نے کابینہ وزیر کے عہدے کا حلف لیا۔

– باول سیٹ سے بی جے پی ممبر اسمبلی بنواری لال نے کابینہ وزیر کے عہدے کا حلف لیا۔

یہ بنے وزیر مملکت

– نارنول سے بی جے پی ممبر اسمبلی اوم پرکاش یادو نے ریاست وزیر کے عہدے کا حلف لیا۔

– جاٹ برادری سے آنے والي کیتھل سیٹ سے بی جے پی ممبر اسمبلی کملیش ڈھاڈھا نے ریاست وزیر کے عہدے کا حلف لیا۔

– اكلانا سیٹ سے جےجےپي ممبر اسمبلی انوپ دھانك نے ریاست وزیر کے عہدے کا حلف لیا۔

– ہاکی کھلاڑی اور پهووا سے بی جے پی ممبر اسمبلی سندیپ سنگھ نے وزیر مملکت کے عہدے کا حلف لیا۔

دشینت چوٹالہ کو ملے 11 وزارت
کابینہ توسیع سے پہلے وزیر اعلی اور نائب وزیر اعلی کے درمیان محکموں کی تقسیم ہوا. دشینت چوٹالہ کو 11 وزارت ملے. اس میں آمدنی اور ہنگامی مینجمنٹ ڈیپارٹمنٹ، ایکسائز اینڈ ٹیكسیسن، دیہی ترقی اور پنچایت، صنعت اور کامرس، صحت عامہ انجینئرنگ، خوراک، شہری فراہمی اور صارفین کیس، لیبر اور روزگار، سول ایوی ایشن،آر کے لوجی اینڈ میوزیم، بحالی اور كنسولڈیشن شامل ہے۔

Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *