این ایچ اے آئی: نہیں ملا نیا چیئر مین

Share Article

دلیپ چیرین
قومی شاہراہوں پر آسانی سے نظر آنے والا گڈھا نیشنل ہائی وے اتھارٹی آف انڈیا (این ایچ اے آئی ) کی اندرونی حالت کی اصلی تصویر پیش کرتا ہے۔ سرکارنے این ایچ اے آئی کے نئے چیئر مین کی تلاش میں ایک سال تک کوشش کی، لیکن مناسب امیدوار نہ ملنے کی وجہ سے اس کے موجودہ چیئر مین برجیشور سنگھ کی مدت کار میں تین ماہ کی توسیع کرنے کا فیصلہ لینے پر مجبور ہوگئی۔ ذرائع کے مطابق دو بار امیدواروں کے نام شارٹ لسٹ کرنے کے بعد بھی مرکزی ٹرانسپورٹ اور قومی شاہراہ کی وزارت برجیشور سنگھ کے جانشین کا انتخاب نہیں کرپائی۔ اس محکمہ کے وزیر کمل ناتھ کے لئے سوچنے کا موضوع یہ بھی ہے کہ جولائی 2006اور دسمبر2008کے درمیان این ایچ اے آئی کے صدر کو پانچ بار کیوں بدلنا پڑا۔ حالانکہ ، اسی سے حکومت کی مجبوری کو بھی سمجھا جاسکتا ہے کہ وہ کیوں نئے صدر کا انتخاب نہیں کرپائی۔ ایسا لگتا ہے کہ اب تو کچھ کرنا ہی ہوگا۔

محکمہ جنگلات کے افسران کے جنگلی قصے

حالیہ دنوں میں حکومت ایک طویل عرصے سے بے اعتنائی کے شکار فوریسٹ سروس کے افسران کے تئیں کچھ زیادہ ہی فراخ دل ہو رہی ہے۔ تربیت کے لئے نئے پروگرام اور تعلیم اور تحقیقی کامو ں کے لئے محکمہ جنگلات کے افسران کو بیرون ملک بھیجے جانے کے فیصلے لئے گئے ہیں، لیکن اب ان فیصلوں پر کہیں نئے سرے سے سوچنا نہ پڑے۔ ابھی تھوڑے دن پہلے ایک چینی خاتون نے مدھیہ پردیش کے ایک افسر پر کناڈا میں ایک تربیتی پروگرام کے دوران ناشائستہ سلوک کا الزام عائد کیا اور اس سے سرکاری حلقوں میں تفکر کی لکیریں کھنچ گئیں۔ حالانکہ فوریسٹ سروس کے افسر ایک دوسری بات کو لے کر راحت محسوس کرسکتے ہیں۔ اس کی وجہ یہ ہے کہ حکومت نے وزیر اعظم منموہن سنگھ کی  اس پیشکش کو فی الحال ٹال دیا ہے، جس میں انہوں نے جنگل اور جنگلی جانوروں کے لئے الگ الگ محکموںکی تشکیل کا مشورہ دیا تھا۔

Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *